جاپان، ویزا گائیڈ چیپٹر5

جاپانی ویزے

جاپانی سفارتخانہ مدت کے لحاظ سے 3 اقسام کے ویزے جاری کرتا ہے۔

سنگل انٹری ویزا

یہ ویزا 3 ماہ کےلئے ہوتا ہے اور اس پر جاپان میں ایک بار ہی انٹری ہو سکتی ہے۔ اس کے بعد یہ Expire تصور ہو گا۔ دوسرے ملکوں کی طرح جاپانی ویزے کی مدت بھی اس کے اجراءکی تاریخ سے شروع ہوتی ہے اور زائد المیعاد ہونے سے قبل ایک بار جاپان میں داخلہ ممکن ہے۔

 ڈبل انٹری ویزا

یہ ویزا 6ماہ کےلئے جاری کیا جاتا ہے اور اس پر 2بار جاپان میں داخل ہوا جا سکتا ہے یعنی کہ 6ماہ کے دوران آپ 2بار جاپان جا سکتے ہیں۔ ایک بار بھی 6ماہ کا مکمل قیام کر سکتے ہیں۔

ملٹی پل ویزا

عموماً جاپانی ایمبیسی ایک سال تک کی مدت کا ملٹی پل ویزا دیتی ہے تاہم جن ملکوں کے ساتھ جاپان کے اچھے دوطرفہ تعلقات ہیں ان کے شہریوں کےلئے مدت 2 اور 3سال بھی ہو سکتی ہے۔ ملٹی پل ویزے پر مقررہ مدت کے دوران جتنی بار چاہیں آ جا سکتے ہیں۔

ویزا فیس

سنگل انٹری ویزا کی فیس 3ہزار جاپانی ین ہے‘ ڈبل انٹری اور ملٹی پل کےلئے 6ہزار جبکہ

ٹرانزٹ ویزا کی فیس 700 ین مقرر ہے۔

ویزا اپلائی کرنے کا طریقہ

جاپانی ویزا کے حصول کےلئے امیدوار کو ذاتی طور پر جاپانی ایمبیسی یا قونصلیٹ جا کر اپلائی کرنا پڑتا ہے اور یہ تمام کیٹگریز کے امیدواروں کےلئے ضروری قرار دیا جا چکا ہے۔ پاکستان میں اسلام آباد اور کراچی میں اپلائی کرنے کی سہولت میسر ہے۔ ویزا اپلائی کرنے کےلئے درج ذیل دستاویزات ضروری ہیں ان کے بغیر آپ کی درخواست جمع نہیں کی جائے گی۔
پُر شدہ ویزا فارم (ایمبیسی/ قونصلیٹ پر بآسانی دستیاب ہیں)-
پاسپورٹ (آپ کے وزٹ تک قابل استعمال ہونا چاہئے)۔-
اصل شناختی کارڈ اور ایک فوٹو کاپی-
ہلکے بیک گراﺅنڈ کے ساتھ  دوتازہ پاسپورٹ سائز تصاویر-
جمع شدہ فیس کی رسید۔-
وزٹ سے متعلق تصدیقی دستاویزات –
اہلیہ اور بچے بھی ساتھ اپلائی کر رہے ہوں تو نکاح نامہ اور جنم پرچیوں کی تقول-
نوٹ: جاپانی ایمبیسی صبح 9سے 11بجے کے دوران درخواستیں جمع کرتی ہے جبکہ پاسپورٹ آٹھویں روز دوپہر 2:30 سے 3:30 کے دوران واپس دیئے جاتے ہیں۔

قلیل مد تی ویزے

اس کیٹگری میں وزیٹرز ویزا‘ ٹرانزٹ ویزا اور جنرل ویزا شامل ہیں۔

وزیٹرز ویزا

عارضی وزیٹرز کو 15یا 90 روز کا ویزا جاری کیا جاتا ہے۔ اس کیٹگری میں وہ لوگ آتے ہیں جو کہ سیزوتفریح‘ کھیل‘ رشتہ داروں اور دوستوں کو ملنے‘ کسی کی عیادت‘ شادی یا آخری رسومات میں شرکت‘ اتھلیٹک ٹورنامنٹس یا مختلف مقابلوں میں شرکت‘ کاروباری مقاصد کےلئے مارکیٹ کے سروے‘ کاروباری معاہدے‘ نمائش میں شرکت اور مذہبی مقاصد سمیت اس نوعیت کی دیگر سرگرمیوں کےلئے جاپان جانا چاہتے ہوں۔

مطلوبہ دستاویزات

وزیٹرز ویزا کےلئے پیچھے بیان کردہ جنرل دستاویزات کے علاوہ درج ذیل اضافی کاغذات لگا کر ویزا درخواست جمع کرائیں۔
(i ہوائی جہاز کا ریٹرن ٹکٹ + ہوٹل بکنگ کا لیٹر۔
(ii اخراجات برداشت کرنے کی صلاحیت کے دستاویزی ثبوت (بنک سٹیٹمنٹ اور جائیداد کے کاغذات)۔
(iii امیدوار کسی فرم میں پارٹنر ہے تو دیگر پارٹنرز کی طرف سے جاری کردہ لیٹر۔
(iv چیمبر آف کامرس کا ممبر شپ کارڈ۔
(v جاپان میں مستقل رہائشی پذیر شہری کا گارنٹی لیٹر (اگر دستیاب ہو) اس لیٹر میں امیدوار کی ویزا ختم ہونے سے پہلے جاپان سے واپسی اور اخراجات کی گارنٹی دی جاتی ہے جس کی بناءپر فوری ویزا جاری ہو جاتا ہے۔
دورے کی وجہ ظاہر کرنے والی کوئی دستاویز مثلاً کسی شادی یا نمائش وغیرہ میں شرکت کےلئے جانا تو دعوت نامہ پیش کرنا ہو گا۔ کوئی فوت ہو گیا ہے یا بیمار ہے تو اس کا اطلاعاتی خط‘ کوئی ٹورنامنٹ ہے تو اس کا شیڈول اور ٹکٹ وغیرہ۔

ٹرانزٹ ویزا

اگر کوئی غیر ملکی جاپان کے راستے سے آگے کسی ملک میں جا رہا ہو تو اسے 15 دن تک کے عارضی قیام کےلئے ٹرانزٹ ویزا مل سکتا ہے۔ اس کےلئے مسافر کے پاسپورٹ پر اس ملک کا ویزا موجود ہونا چاہئے جہاں براستہ جاپان جا رہا ہے۔ وہاں جانے کےلئے کنفرم ٹکٹ بھی ضروری ہے۔

طویل مدتی ویزے

طویل قیام کے ویزے درج ذیل کیٹگریز میں آتے ہیں۔

سٹوڈنٹ ویزا

جاپانی کالج میں داخلے کےلئے سکول کی 12سالہ تعلیم مکمل ہونا ضروری ہے یعنی کہ پاکستانی انٹرمیڈیٹ پاس ہو۔ کالج سٹوڈنٹ کو 2سال جبکہ پری کالج سٹوڈنٹ کو 1سال تک کا ویزا دیا جاتا ہے۔ عموماً زیادہ تر جاپانی اداروں میں تعلیم حاصل کرنے کےلئے جاپانی زبان سیکھنا ضروری ہے۔

ویزا اپلائی کرنے کےلئے درکار کاغذات

(i جاپانی تعلیمی ادارے کی جانب سے ایڈمیشن سرٹیفکیٹ جو کہ ادارے مطلوبہ لینگوئج اور قابلیت ٹیسٹ اور فیسوں کی ادائیگی کے بعد جاری کرتے ہیں۔
(ii اخراجات پورے کرنے سے متعلق ثبوت یعنی کہ بنک سٹیٹمنٹ وغیرہ۔
(iii والد یا سرپرست کا بیان حلفی جس میں وہ اخراجات پورے کرنے کی ذمہ داری لے۔
(iv تعلیمی اسناد کی فوٹو کاپیاں۔
(v جاپانی شہری یا مستقل رہائش پذیر شخص کا لیٹر آف گارنٹی (اگر دستیاب ہو)۔
(vi جاپانی وزارت خارجہ کی طرف سے جاری کردہ (Certificate of Eligibility)
نوٹ: اہلیتی سرٹیفکیٹ کےلئے ویزا کی درخواست دینے سے پہلے اپلائی کیا جاتا ہے۔ یہ سرٹیفکیٹ ساتھ لگا کر ویزا کےلئے اپلائی کریں تو پاکستان میں موجود جاپانی قونصلیٹ/ ایمبیسی ہی طویل مدتی ویزا جاری کر دے گی وگرنہ کیس اپنی وزارت خارجہ کو بھجوا دے گی۔

اہلیتی سرٹیفکیٹ

یہ سرٹیفکیٹ جاپان کی ریجنل امیگریشن اتھارٹی وزارت قانون کی ہدایات کے تحت جاری کرتی ہے جس میں تسلیم کیا جاتا ہے کہ امیدوار امیگریشن کنٹرول ایکٹ کی شرائط پر پورا اترتا ہے۔ امیگریشن اتھارٹی قوانین کے تحت جائزہ لیتی ہے کہ امیدوار جس مقصد کےلئے جاپان آنا چاہتا ہے وہ قابل قبول ہے یا نہیں۔ تمام طویل مدتی ویزوں کےلئے اہلیتی سرٹیفکیٹ ضروری ہے۔ امیدوار یہ درخواست کے ساتھ نہ لگائے تو ایمبیسی اس کا کیس قانونی جانچ کےلئے اپنی وزارت خارجہ کو بھجواتی ہے جہاں سے وزارت قانون اور پھر امیگریشن اتھارٹی کے پاس آتا ہے اس طرح دو سے تین ماہ تک کا عرصہ لگ جاتا ہے۔ پہلے سے اہلیتی سر ٹیفکیٹ حاصل کیا ہو تو اس عمل سے نہیں گزرنا پڑتا اور ایک ماہ سے بھی کم عرصہ میں ویزا مل جاتا ہے۔
اہلیتی سر ٹیفکیٹ کے حصول کےلئے امیدوار کو جاپان کی ریجنل امیگریشن اتھارٹی کے پاس کسی نمائندہ/ وکیل کے ذریعے اپلائی کرنا ہوتا ہے جو کہ تمام دستاویزات کا جائزہ لے کر سرٹیفکیٹ جاری کرتی ہے۔

japan work visa

ورک ویزا

جاپانی حکومت نے ورک ویزا کی کیٹگری بہت وسیع رکھی ہے جس میں سکلڈ ورکرز کے علاوہ بہت سے پیشے بھی شامل کئے گئے ہیں۔ ان میں چیدہ چیدہ پروفیسرز‘ آرٹسٹ‘ مذہبی کارکن‘ صحافی‘ انویسٹر/ بزنس مینجرز‘ لیگل/ اکاﺅنٹنگ سروسز‘ میڈیکل سروسز‘ ریسرچرز‘ انسٹرکٹرز‘ انجینئرز‘ انٹرکمپنی سٹاف‘ سکلڈ لیبر شامل ہیں۔ اس کیٹگری میں قیام کی مدت دیکھتے ہوئے 1سال اور 3سال کے ویزے جاری کئے جاتے ہیں۔
(i پروفیسرز: جو پروفیسرز یا اسسٹنٹ پروفیسرز تعلیمی مقاصد کےلئے ریسرچ یا تعلیم وتدریس کےلئے جاپان جانا چاہیں ان کو ان کے دورہ کی نوعیت دیکھتے ہوئے طویل المدتی قیام کا ویزا مل جاتا ہے۔ جس کےلئے جنرل دستاویزات کے علاوہ درج ذیل دستاویزات درکار ہوں گی۔
٭ جاپان میں مصروفیت کے حوالے سے کاغذات (ریسرچ کےلئے جا رہے ہیں تو متعلقہ ادارے کا لیٹر اور خط وکتابت کا ریکارڈ)۔
٭ تعلیم وتدریس کےلئے جانا مقصود ہے تو متعلقہ تعلیمی ادارے کی طرف سے جاری کردہ تقرری کا خط۔
٭ پاکستان میں اپنے موجودہ عہدہ کو ثابت کرنے کےلئے دستاویزات۔
٭ ریسرچ کےلئے جا رہے ہیں تو اس دوران اٹھنے والے اخراجات برداشت کرنے کی صلاحیت ثابت کرنے کےلئے بنک سٹیٹمنٹ اور جائیداد وغیرہ کے کاغذات۔
٭ اہلیتی سرٹیفکیٹ۔
(ii آرٹسٹ: آرٹس اور فنون لطیفہ سے تعلق رکھنے والے لوگ جو جاپان میں رہ کر پیشہ وارانہ سرگرمیاں جاری رکھنا چاہتے ہوں خواہ وہ فنکار‘ گلوکار‘ رائٹرز‘ کمپوزر یا فوٹوگرافرز ہوں ان کو بھی ورک ویزا جاری کیا جاتا ہے۔ اس ویزا کےلئے ورک ویزا کی شرائط پر ہی پورا اترنا ہو گا۔
(iii مذہبی کارکن: عالمی مذہبی تنظیموں کے زیراہتمام مذہبی سرگرمیوں میں حصہ لینے کےلئے مشنری اور دیگر مذہبی کارکنوں کو ان کی جاپان میں مصروفیت کے مطابق طویل المدتی ویزا دیا جاتا ہے۔ اس کےلئے درج ذیل دستاویزات کی ضرورت ہوتی ہے۔
٭ غیر ملکی مذہبی تنظیم کی طرف سے جاری کردہ خط جس میں امیدوار کی حیثیت‘ جاپان میں متوقع قیام کی مدت اور سرگرمیوں کے بارے میں تفصیلات دی گئی ہوں۔
٭ بھیجنے والی تنظیم کے بارے میں دستاویزات (یعنی رجسٹریشن اور مقاصد وغیرہ سے متعلق)۔
٭ امیدوار کے بطور مذہبی کارکن کیریئر سے متعلق کاغذات۔
٭ گارنٹی لیٹر (اگر دستیاب ہو تو)۔
٭ امیگریشن اتھارٹی سے حاصل کردہ اہلیتی سرٹیفکیٹ (اگر دستیاب ہو تو)۔
(iv جرنلسٹس: نیوز کوریج اور دیگر صحافتی امور کےلئے کسی غیر ملکی میڈیا گروپ سے کنٹریکٹ کے تحت صحافیوں اور فوٹوگرافرز کو ورک ویزا دیا جاتا ہے۔ ان میں ٹی وی اور ریڈیو یعنی الیکٹرانک میڈیا کے لوگ اور فری لانسرز بھی شامل ہیں۔ ویزے کےلئے متعلقہ میڈیا گروپ کے ساتھ معاہدے کی کاپی‘ اپنی بطور جرنلسٹ پہچان کےلئے دستاویزات‘ جاپان میں سرگرمیوں کی تفصیل اور گارنٹی لیٹر وغیرہ ویزا درخواست کے ساتھ لگا کر اپلائی کیا جائے گا۔
(v انویسٹرز/ بزنس مینجرز: ایسے سرمایہ کار جو کہ جاپان کے ساتھ تجارت کرنا چاہیں یا وہاں سرمایہ کاری کے خواہشمند ہوں اور بزنس مینجرز جو غیر ملکی کمپنیوں کے بزنس کی مینجمنٹ کےلئے جاپان جانا چاہیں ان کو اس کیٹگری میں شامل کیا گیا ہے۔ واضح رہے کہ سرمایہ کاری کےلئے جاپانی وزارت صنعت وتجارت کے قواعد وضوابط پورے کرنا ہوں گے۔ انویسٹرز کو ویزا کےلئے درج ذیل کاغذات کی ضرورت ہو گی۔
٭ بزنس پلان جس کے تحت سرمایہ کاری کرنے کا پروگرام ہو۔
٭ موجودہ بزنس کمپنی کی رجسٹریشن۔
٭ کمپنی کی نفع ونقصان کی سٹیٹمنٹ۔
٭ جاپان میں بزنس کے دوران مطلوبہ سٹاف کی تعداد کا تخمینہ۔
٭ آفس کہاں قائم کیا جائے گا اس کے حصول کےلئے جاپانی پارٹی سے طے ہونے والے معاہدہ کی کاپی۔
٭ جس کمپنی کے ساتھ زیادہ لین دین متوقع ہے وہ گارنٹی لیٹر دے گی۔
٭ امیگریشن اتھارٹی سے اہلیتی سرٹیفکیٹ حاصل کرنا ہو گا۔
(vi میڈیکل سروسز: اس کیٹگری کےلئے ایم بی بی ایس ڈاکٹر‘ سپیشلسٹ اور ڈینٹسٹ وغیرہ اپلائی کر سکتے ہیں جو کہ جاپانی معیار پر پورے اترتے ہوں اور وہاں کسی ہسپتال یا کلینک کے ساتھ منسلک ہو کر لوگوں کو علاج معالجے کی سہولیات فراہم کر سکیں۔ ان امیدواروں کو ویزا درخواست کے ساتھ درج ذیل دستاویزات منسلک کرنا ہوں گی۔
٭ ملازمت آفر کرنے والی آرگنائزیشن کی تفصیلات۔
٭ جاب کےلئے طے شدہ معاہدہ۔
٭ امیدوار کی تعلیمی وپیشہ وارانہ اہلیت ثابت کرنے کےلئے اسناد کی کاپیاں۔
(vii انجینئرز: جاپانی کمپنیوں کی طرف سے جاب آفرز پر تجربہ کار انجینئرز کو بھی 1 سال سے 2 سال تک کا ورک ویزا دیا جاتا ہے اس کےلئے اہلیت اور دستاویزات درج ذیل ہیں۔
٭ بلوانے والی کمپنی کی رجسٹریشن اور نفع ونقصان کی سٹیٹمنٹ کی کاپیاں۔
٭ امیدوار کے تعلیمی کاغذات کی فوٹو کاپیاں۔
٭ جاپانی کمپنی کے ساتھ ہونے والے معاہدے کی کاپی۔
٭ گارنٹی لیٹر اور اہلیتی سرٹیفکیٹ۔
(viii انسٹرکٹرز: ایلیمنٹری سکولز‘ جونیئر وہائی سکولز‘ بلائینڈ سکولز اور خصوصی بچوں کے سکولز میں پڑھانے کےلئے بھی ورک ویزا جاری ہوتا ہے۔ اس کےلئے پہلے آپ کا جاپانی سکول کی انتظامیہ سے معاہدہ ہو گا پھر ویزا اپلائی کریں گے جس کےلئے درج ذیل کاغذات درکار ہوں گے۔
٭ متعلقہ سکول انتظامیہ/ آرگنائزیشن سے طے پانے والے معاہدہ کی کاپی۔
٭ تعلیمی سرٹیفکیٹس اور پیشہ وارانہ تربیت کی اسناد کی کاپیاں۔
٭ تجربہ کے سرٹیفکیٹس کی کاپیاں۔
٭ جاپان میں متوقع ملازمت کی مدت اور رہائشی بندوبست کی تفصیلات۔
٭ گارنٹی لیٹر اور امیگریشن اتھارٹی کا جاری کردہ اہلیتی سرٹیفکیٹ۔
(ix انٹر کمپنی سٹاف: ایسے کاروباری ادارے اور کمپنیاں جنہوں نے جاپان میں بھی اپنے دفاتر قائم کر رکھے ہوں وہ پاکستان سے وہاں اپنا سٹاف بھجوا سکتی ہیں۔ اس کےلئے بھی 3 سال تک کا ورک ویزا جاری ہوتا ہے۔ اس کےلئے مطلوبہ دستاویزات یہ ہیں۔
٭ پاکستان اور جاپان میں واقع دفاتر کے درمیان تعلق ثابت کرنے کےلئے رجسٹریشن اور لائسنس کی کاپیاں۔
٭ جاپانی برانچ کے نفع ونقصان پر مشتمل سٹیٹمنٹ۔
٭ امیدوار کی مذکورہ برانچ میں متوقع ذمہ داریوں سے متعلق کمپنی کا لیٹر۔
٭ مطلوبہ سیٹ پر کام کرنے کےلئے درکار قابلیت کے حوالے سے اسناد کی کاپیاں۔
٭ کمپنی کا گارنٹی لیٹر۔
٭ امیگریشن اتھارٹی کا اہلیتی سرٹیفکیٹ۔
(x سکلڈ لیبر: جاپان کے کسی صنعتی ادارہ کی طرف سے ملازمت دیئے جانے پر ٹیکنیکل افراد کو ورک ویزا دیا جاتا ہے۔ اس کےلئے درکار کاغذات درج ذیل ہیں۔
٭ متعلقہ صنعتی ادارے یا کمپنی کی رجسٹریشن اور نفع ونقصان کی سٹیٹمنٹ کی کاپیاں۔
٭ ملازمت کےلئے مطلوبہ معیار اور قابلیت کی تفصیلات۔
٭ امیدوار کے تعلیمی وفنی سرٹیفکیٹس کی کاپیاں۔
٭ ملازمت کے معاہدہ کی کاپی۔
٭ گارنٹی لیٹر (کمپنی کی طرف سے جاری کیا گیا ہو)۔
٭ امیگریشن اتھارٹی کا اہلیتی سرٹیفکیٹ۔
(xi فنی تربیت: جاپان سے ہیوی مشینری اور انجینئرنگ کا سامان منگوانے والی غیر ملکی کمپنیاں اپنے ٹیکنیکل سٹاف کو ٹریننگ کےلئے جاپانی کمپنیوں میں بھجواتی ہیں جس کےلئے ورک ویزا دیا جاتا ہے اس کےلئے درکار اہلیت اور دستاویزات درج ذیل ہیں۔
٭ تربیتی منصوبہ کی کاپی جس میں ٹریننگ کا مقام‘ دورانیہ اور نوعیت وغیرہ کی وضاحت کی گئی ہو۔
٭ ایسی دستاویز جو ظاہر کرے کہ امیدوار جس شعبہ میں کام کر رہا ہے اس کو اس میں مزید تربیت کی ضرورت ہے جس کےلئے جاپان جانا چاہتا ہے۔
٭ امیدوار کے فنی ڈپلومہ اور تعلیمی اسناد کی کاپیاں۔
٭ جاپانی کمپنی کی طرف سے تربیت کےلئے جاری کردہ خط کی کاپی۔
٭ جاپانی کمپنی کی رجسٹریشن کی کاپی۔
٭ گارنٹی لیٹر اور اہلیتی سرٹیفکیٹ کی کاپی۔

جاپان ویزا

خاص ویزے

جاپانی شہریوں اور وہاں مستقل رہائش کا درجہ رکھنے والوں کے خونی رشتہ دار یعنی کہ شوہر‘ بیوی اور بچوں کو 1سال اور 3سال کے رہائشی ویزے دیئے جاتے ہیں۔ اس کیٹگری میں مہاجرین بھی شامل ہیں۔

جاپانی شہری سے شادی

جاپانی شہری سے شادی کی صورت میں ابتداءمیں ایک یا 3سال کا ویزا ملتا ہے اس کےلئے درکار کاغذات درج ذیل ہیں۔
٭ جاپانی شہری کی شہریت کا ثبوت۔
٭ میرج سرٹیفکیٹ کی کاپی۔
٭ جاپانی شہری کا سلسلہ روزگار اور انکم سرٹیفکیٹ کی کاپی۔
٭ گارنٹی لیٹر۔

اپنائے گئے بچوں کےلئے ویزا

جاپانی شہری کسی غیر ملکی بچے کو گود لے تو ویزا کےلئے درج ذیل دستاویزات درکار ہو نگی۔
٭ جاپانی نیشنل فیملی رجسٹریشن کارڈ کی کاپی۔
٭ بچے کے والدین کی طرف سے اجازت نامہ کی کاپی۔
٭ بچے کا برتھ سرٹیفکیٹ۔
٭ جاپانی شہری کا انکم سرٹیفکیٹ اور گارنٹی لیٹر۔

 مہاجرین کےلئے رہائشی ویزا

جاپان جنیوا کنونشن کے تحت مہاجرین کو بھی طویل مدتی قیام کے ویزے جاری کرتا ہے۔ پہلے سے آباد مہاجرین کی دوسری اور تیسری نسل کو بھی یہ ویزے دیئے جا رہے ہیں۔ اس کےلئے درج ذیل کاغذات کی ضرورت ہوتی ہے۔
٭ فیملی رجسٹریشن کی کاپی۔
٭ رشتہ کے حساب سے میرج سرٹیفکیٹ/ برتھ سرٹیفکیٹ کی کاپی۔
٭ اخراجات برداشت کرنے کی اہلیت/ کوئی دوسرا کفیل ہو تو اس کی انکم کی تفصیلات۔
٭ جاپان میں مستقل رہائش پذیر شخص کا گارنٹی لیٹر۔
جاپانی ویزا انفارمیشن سنٹر
جاپانی محکمہ خارجہ نے ٹوکیو میں ویزا انفارمیشن سنٹر قائم کر رکھا ہے جہاں سے میل‘ فیکس اور فون کے ذریعے معلومات حاصل کی جا سکتی ہیں اس کا ایڈریس درج ذیل ہے:
Visa Information Center,
1st Floor, Ministry of Foreign Affairs,
2-2-1 Kasumigaseki, Chiyoda-ku, TOKYO 100-8919
Ph. No. 03-5501-8431
Fax No. 03-5501-8490
(پاکستان سے فون یا فیکس کرنے کےلئے پہلے جاپان کا انٹرنیشنل کوڈ لگائیں گے)
بذریعہ فون معلومات
ٹیلیفون کے ذریعے 24گھنٹے درج ذیل معلومات حاصل کی جا سکتی ہیں۔
٭ ویزا درخواست کے ذریعے مطلوبہ کاغذات کی تفصیل۔
٭ امیگریشن بیوروز سے متعلق معاملات جیسے کہ اہلیتی سرٹیفکیٹ کے اجراءاور جاپان میں قیام وغیرہ کے بارے میں کہاں سے معلوم کریں۔
٭ اہلیتی سرٹیفکیٹ ملنے کے بعد ویزا درخواست کے بارے میں معلومات۔
٭ ویزا درخواست جمع کرانے کے بعد کے جاری عمل اور مطلوبہ مدت کے بارے میں معلومات۔
٭ جاپانی سفارتکاروں کے ٹیلیفون نمبرز۔
بذریعہ فیکس
فیکس پر معلومات کی وصولی کےلئے سب سے پہلے فیکس سے نمبر 03-5501-8490 ڈائل کریں۔ ویزا ٹائپ سلیکٹ کریں اور مطلوبہ معلومات کا آئی ڈی کوڈ دبا کر وائس ریکارڈر پر ملنے والی ہدایات پر عمل کریں۔ جس کی تکمیل پر آپ کو اسی وقت فیکس کے ذریعے معلومات موصول ہو جائیں گی۔

جاپانی ایئرپورٹس پر امیگریشن طریقہ کار

جاپانی حکومت نے دنیا بھر میں دہشت گردوں کی بڑھتی ہوئی سرگرمیوں کے پیش نظر 24مئی 2006ءسے اپنے امیگریشن ایکٹ میں ترامیم کر کے طریقہ کار کو کچھ سخت بنایا ہوا ہے جس کے تحت ویزا لے کر جاپان میں داخلے کے خواہشمند غیر ملکیوں کے ایئرپورٹ پر فنگر پرنٹس لئے جاتے ہیں اور ایک تصویر بنائی جاتی ہے۔ اس کے ساتھ ہی امیگریشن کنٹرول آفیسر انٹرویو کرے گا جس میں جاپان آنے کی وجوہات پوچھیں گے اور پاسپورٹ کا جائزہ لیں گے۔ اطمینان ہونے پر داخلے کی اجازت دی جائے گی۔ امیگریشن آفیسر مذکورہ عمل پورا نہ کرنے والے غیر ملکیوں کو ایئرپورٹ سے ہی واپس بھیجنے کا اختیار رکھتے ہیں۔ لہٰذا تمام افراد کو اس عمل سے گزرنا پڑے گا تاہم درج ذیل لوگ مستثنیٰ ہیں۔
(i خصوصی مستقل رہائش پذیر افراد۔
(ii 16 سال سے کم عمر کے افراد۔
(iii سفارتکار/ آفیشلز۔
(iv قومی اداروں کے سربراہان کی طرف سے مدعو کئے گئے افراد۔
درخواست کی منظوری پر جاپانی شہریت دے دی جاتی ہے۔

You may also like...

1 Response

  1. Rana hamza says:

    Japan all viza rate

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

%d bloggers like this: