سویڈن کے بارے میں‌دلچسپ معلومات

مملکت سویڈن شمالی یورپ میں واقع ہے جس کے اطراف میں زیادہ تر سمندر ہے۔ اس کا کل رقبہ 449964 مربع کلومیٹر اور آبادی تقریباً 92 لاکھ ہے۔ سرکاری مذہب عیسائیت اور زبان سونسکا ہے جبکہ دارالحکومت اسٹاک ہوم (STOCK HOLM) اور کرنسی ”کرونا“ ہے۔ شرح خواندگی 100 فیصد ہے۔ گوٹی برگ‘ ایلوس برگ‘ اوسٹر گوٹ لینڈ‘ مالمو جس بڑے شہر ہیں۔ اس کا شمالی علاقہ بہت سرد ہے۔ جہاں 4 سے 7 ماہ تک برف باری ہوتی ہے۔ جنوبی علاقہ کم سرد ہے۔ یہاں موسم گرما قدرے گرم اور بارش سارا سال رہتی ہے۔ وقت کے لحاظ سے پاکستان سے 4گھنٹے پیچھے ہے۔ موٹرکاریں‘ مشینری‘ کاغذ‘ کاغذ پروڈکٹس‘ آئرن اینڈ سٹیل پروڈکٹس اور پٹرولیم مصنوعات اس کی برآمدات میں شامل ہیں جبکہ مشینری‘ ریڈی میڈ گارمنٹس‘ سٹیل پروڈکٹس اور کیمیکلز درآمد کرتا ہے۔

نظام حکومت آئینی ملوکیت ہے۔ اس کے بادشاہ کارل گستاف سیز دہم ہیں جبکہ وزیراعظم کی سربراہی میں جمہوری حکومت بھی قائم ہے۔ آئینی طور پر 349 رکنی رکس ڈاگ (پارلیمنٹ) کو پورے نظام پر فوقیت حاصل ہے۔ یہی پارلیمنٹ وزیراعظم کا انتخاب کرتی ہے جو کہ اسی پارلیمنٹ سے اپنی کابینہ تشکیل دیتا ہے پھر قانون سازی کا اختیار حکومت اور پارلیمنٹ میں تقسیم ہو جاتا ہے جبکہ عدلیہ آزاد حیثیت رکھتی ہے۔
سویڈن ایک برآمدی رجحان رکھنے والی منڈی کی معیشت رکھتا ہے جس کا تقسیم کا جدید نظام‘ بہترین اندرونی و بیرونی رابطے اور تربیت یافتہ مین پاور ہے۔ لکڑی‘ لوہا اور پٹرولیم مصنوعات کے ذخائر کی بنیاد پر چلنے والی معیشت بڑے پیمانے پر عالمی تجارت میں شریک ہے۔ جی ڈی پی کے لحاظ سے یہ دنیا کی نویں بڑی اکانومی ہے۔

سویڈن میں حال ہی میں‌ ماہرین نے دنیا کی پہلی ’الیکٹرک سڑک‘ تیار کی ہے جس میں صرف ایک کیبل کی مدد سے عام گاڑی کو الیکٹرک کار میں تبدیل کیا جا سکے گا جب کہ بجلی سے چلنے والی گاڑیوں کی بیٹریوں کو بھی چارج کیا جاسکے گا۔

اسٹاک ہوم میں تیار ہونے والی دو کلو میٹر طویل الیکٹرک سڑک کو آزمائشی بنیادوں پر کھول دیا گیا ہے۔ الیکٹرک سڑک ائیرپورٹ کے قریب بنائی گئی ہے۔ سڑک پر گاڑی چلانے کے لیے اسے الیکٹرک کیبل سے منسلک کیا جاتا ہے جب کہ کیبل کا دوسرا سرا سڑک پر لگے الیکٹرک سسٹم سے جوڑ دیا جاتا ہے جس کے بعد ایک عام گاڑی مکمل طور پر الیکٹرک کار میں تبدیل ہوجاتی ہے۔

سویڈن میں 2030ء تک فیول سے نجات حاصل کرنے اور ٹرانسپورٹ سیکٹر میں تیل کے استعمال میں 70 فیصد تک کمی لانے کے لیے توانائی کے دیگر ذرائع پر کام کیا جا رہا ہے ۔ منصوبے کے تحت الیکٹرک سڑک کی تعمیر کا فیصلہ کیا گیا جو سڑک پر گزرنے والی گاڑیوں کی بیٹریوں کو چارج بھی کر سکے گی اور گاڑیوں کی روانی کے لیے تیل کے بجائے برقی توانائی کو استعمال کیا جائے گا۔

You may also like...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

error: Content is protected !!
%d bloggers like this: