امریکہ کی امیگریشن حاصل کرنے کا طریقہ

یوایس امیگرنٹ ویزا:

امریکہ کے مستقل ویزا کے حصول کیلئے ضروری ہے کہ کوئی امریکی شہری (فیملی ممبر یا کمپنی مالک) آپ کو سپانسر کرے اور ہر قسم کی ذمہ داری لے۔ امیگریشن قوانین کے مطابق خونی رشتہ دار ہی ایک دوسرے کو سپانسر کر سکتے ہیں اور اس کی ایک حد مقرر ہے۔ امیگریشن ویزا کی اقسام درج ذیل ہیں۔
.1 فیملی امیگریشن
.2 شادی کے ذریعے امیگریشن
.3 مستقل نوکری کے ذریعے امیگریشن
.4 بذریعہ سرمایہ کاری امیگریشن
امیگرنٹ ویزا کے حصول کا طریقہ کار
٭ امریکی شہری جس نے ویزا سپانسر کرنا ہے وہ اپنے پاکستانی رشتہ دار یا ملازم کیلئے محکمہ ہوم لینڈ سکیورٹی کے یو ایس سٹیزن شپ اینڈ امیگریشن ڈیپارٹمنٹ میں ایک I-130 پٹیشن دائر کرے گا۔
٭ پٹیشن کی فیس 355 امریکی ڈالر ہے۔
٭ پٹیشن دائر کرنے والا (Petitioner) امریکی شہری 6ماہ تک پاکستان میں قیام کر کے آیا ہو۔
٭ جس پاکستانی کیلئے پٹیشن دائر کی جا رہی ہے اس کی امریکہ میں اس وقت موجودگی ضروری نہیں۔
٭ پٹیشن منظور ہونے کی صورت میں I-130 فارم نیشنل ویزا سنٹر بھیج دیا جائے گا جو کہ سب سے پہلے سپانسر سے ذمہ داری کا اشٹام (Affidavit of support) جمع کریں گے۔
٭ نیشنل ویزا سنٹر پٹیشن کی مطلوبہ تاریخ آنے پر پاکستانی شہری (جس کیلئے پٹیشن دائر کی گئی تھی) کو Packet-3 لیٹر بھیجے گا جس میں مستقل ویزا کیلئے مطلوبہ کاغذات اور آئندہ کا لائحہ عمل تمام ہدایات سمیت درج ہو گا۔
٭ تمام مطلوبہ کاغذات حاصل کرنے کے بعد امیدوار پیکٹ۔3 لیٹر کی پشت پر اپنے دستخط کرے گا اور اسے فارم OF-230 کے ساتھ ایمبیسی کے قونصلر سیکشن کو بھجوادے گا۔
٭ اب امیدوار کو ویزا سنٹر سے فارمز‘ معلومات اور کاغذات کیلئے درخواست پر مشتمل ”پیکٹ:305“ بھجوایا جائے گا۔
٭ امیدوار تمام فارم پر کرے گا اور مطلوبہ کاغذات کے ہمراہ اسے امریکن ایکسپریس کے ذریعے واپس بھجوائے گا۔
٭ پیکٹ واپس ملنے پر ویزا سیکشن آئندہ چند روز میں انٹرویو کا وقت مقرر کرے گا۔
٭ انٹرویو کے روز امیدوار حلف لینے اور انٹرویو دینے سے قبل IV پراسیسنگ فیس جمع کرائے گا جو کہ 400ڈالر ہو گی۔
٭ انٹرویو کے روز امیدوار اپنے میڈیکل ٹیسٹوں کی رپورٹس سمیت تمام مطلوبہ اصل کاغذات ساتھ لے کر جائے۔
نوٹ: سرمایہ کاری کے ذریعے مستقل ویزا حاصل کرنے کیلئے امیدوار خود I-526 پٹیشن دائر کرے گا۔ واضح رہے کہ اس کیٹگری میں امریکہ ہر سال 10ہزار سرمایہ کاروں کو امیگرنٹ ویزے جاری کرتا ہے اس کیلئے امیدوار کی امریکہ میں کم از کم 10لاکھ ڈالر کی انویسٹمنٹ ضروری ہونی چاہئے اور اس کی کمپنی سے کم از کم 10روزگار کے مواقع پیدا ہوتے ہوں۔ مطلوبہ سرمایہ بلیک منی نہیں ہونا چاہئے۔ ان تمام شرائط کے دستاویزی ثبوت پیش کرنا ہونگے۔
امیگرنٹ ویزا سے متعلق اہم سوالات
س: مجھے سٹیزن شپ اینڈ امیگریشن سروسز سے پٹیشن منظور ہونے کا نوٹس مل چکا ہے مگر کیس ابھی نیشنل ویزا سنٹر کیوں نہیں پہنچا؟
ج: نیشنل ویزا سنٹر کیس ضرور پہنچ چکا ہے تاہم آپ کو کم از کم 3ہفتے پٹیشن کی منظوری کے بعد انتظار کرنا پڑے گا کیونکہ اس دوران سنٹر نے کیس ریکارڈ بنانا ہے اور اس کو ایک کیس نمبر دینا ہے لہٰذا آپ 3ہفتے بعد سنٹر سے رابطہ کر سکتے ہیں۔
س: میرا کیس نیشنل ویزا سنٹر پہنچ چکا ہے اب آگے کیا ہو گا؟
ج: یہ آپ کے کیس کی نوعیت پر منحصر ہے۔ اگر یہ قریب ترین رشتہ دار سپانسرڈ یا میرج کیس ہے تو یہ خودبخود اگلے مرحلہ میں چلا جائے گا یعنی کہ سنٹر آپ سے جلد رابطہ کرے گا۔ اگر آپ کی ویزا کیٹگری فیملی پریفرنس یا ملازمت ہے تو اس کیلئے ایک لمبی تعداد پہلے سے موجود ہو گی اور آپ کا نام ویٹنگ لسٹ میں شامل کر لیا جائے گا پھر نمبر آنے پر آپ کو مطلع کیا جائے گا۔
س: میں نیشنل ویزا سنٹر کو مطلوبہ فیسیں کیسے ادا کروں گا؟
ج: ویزا سنٹر آپ کو ویزا پراسیسنگ فیس اور ایفی ڈیوٹ آف سپورٹ فیس کا بل بھیجے گا جس کی آپ بذریعہ منی آرڈر یا چیک بتائے گئے بنک کے ذریعے ادائیگی کریں گے۔ اس کے علاوہ کسی کو کوئی فیس دستی جمع نہ کرائیں۔
س: یہ فیس کتنی ہو گی؟
ج: اشٹام فیس 70ڈالر جبکہ ویزا فیس (بشمول سکیورٹی فیس) 400 ڈالر ہے۔
س: میں امریکہ میں رہتے ہوئے ہی اپنا Status نان امیگرنٹ سے امیگرنٹ میں بدلنا چاہتا ہوں‘ اس کیلئے کیا کروں؟
ج: اس کیلئے آپ کو یو ایس سٹیزن شپ اینڈ امیگریشن سروسز (USCIS) کو آگاہ کرناپڑے گا جو کہ نیشنل ویزا سنٹر کو سارا عمل امریکہ میں ہی مکمل کرنے کی ہدایت کر دے گا۔
س: میں نے اپنے پاکستانی رشتہ دار کیلئے پٹیشن دائر کی تو میں گرین کارڈ ہولڈر تھا اور اب امریکی شہری بن چکا ہوں‘ پٹیشن کو کیسے اپ گریڈ کروں؟
ج: اس مقصد کیلئے شہریت سرٹیفکیٹ کی کاپی پٹیشن کے کوائف لکھ کر ایک لیٹر کے ہمراہ نیشنل ویزا سنٹر کو بھجوانا ہو گی۔
س: میرا رشتہ دار سارا عمل مکمل کر کے ویزا انٹرویو کیلئے ایمبیسی گیا تو اس کی درخواست مسترد کر دی گئی‘ نیشنل ویزا سنٹر میں اپیل ہو سکتی ہے؟
ج: جی نہیں‘ نیشنل ویزا سنٹر کے پاس اس کا کوئی اختیار نہیں ہے۔ مزید معلومات کیلئے یو ایس قونصلر آفس رابطہ کیا جا سکتا ہے۔
س: کیا میں پٹیشن دائر کرنے کے بعد منظوری سے قبل واپس لے سکتا ہوں؟
ج: جی ہاں‘ اس کیلئے آپ اپنے وکیل کے ذریعے یا خود تحریری بیان نیشنل ویزا سنٹر پر جمع کرائیں گے جس کے بعد ایک عمل مکمل ہونے پر کیس واپس کر دیا جائے گا۔
یہ بھی پڑھیں.(امریکی وزٹ ویزا خود اپلائی کرنے کا طریقہ)

آپ یہ صفحات بھی دیکھنا پسند کریں گے ۔ ۔ ۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Translate »
error: Content is protected !!
%d bloggers like this: